بریکنگ نیوز: گھیرا تنگ ۔۔۔۔۔ چوہدری مونس الٰہی کی بھی شامت آگئی

لاہور(ویب ڈیسک)نیب لاہورنےاسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی کے صاحبزادے چوہدری مونس الٰہی کےخلاف جاری تحقیقات کادائرہ وسیع کردیاہے۔گزشتہ روزنیب لاہور کی تحقیقاتی ٹیم نے ڈائریکٹر جنرل گلیات اتھارٹی کو ایک مراسلہ ارسال کیا ہےجس میں مکان نمبر 65کھیرہ گلی تحصیل آباد میں خریدےمکان کا ریکارڈ طلب کیا گیا ہے۔نیب لاہور کے ذرائع نےبتایاکہ

ہمارےپاس اس بات کےٹھوس شواہدہیں کہ یہ جائیداد چوہدری مونس الٰہی نےخریدی ہے،لیکن اس کےبارےمیں وہ یہ بات بتانےسےقاصرہیں کہ اس جائیدادکوخریدنےکےلئےان کےپاس فنڈزکہاں سےآئے۔ نیب لاہورکی تحقیقاتی ٹیم نےچوہدری مونس الہی کو7اگست کوریکارڈ سمیت پیش ہونے کی ہدایت بھی کی ہے۔دوسری جانب ایک اور خبر کے مطابق پاکستانی حکومت نے برطانیہ کو کہا ہے کہ شہباز شریف کے داماد عمران علی یوسف کو پاکستان کے حوالے کیا جائے تاکہ ان پر قائم مقدمے کی تفتیش ہوسکے۔ برطانوی حکام نے پاکستانی حکام کی طرف سے برطانوی محکمہ سینٹرل اتھارٹیز انٹرنیشنل کرمنیٹلی یونٹ ہوم آف کی تصدیق کی ہے، وزیراعظم عمران خان کے مشیر برائے احتساب شہزاد اکبر اس سلسلے میں تبصرے کے لئے موجود نہیں تھے مگر یہ طے ہے کہ ان کی ہدایت پر ملزم کی تحویل کے لئے خط لکھا گیا ہے۔ ایک ذرائع کا کہنا تھا کہ عمران علی یوسف کو باہمی تبادلہ تحویل برائے ملزمان کے تحت درخواست دی ہے۔ باہمی معاہدے کا مطلب ہے کہ اگر کوئی برٹش پاکستانی کسی سنگین جرم میں برطانیہ سے فرار ہوکر پاکستان چلا جائے تو اسے باہمی ملزمان کی تحویل کے معاہدے کے تحت واپس کیا جاسکتا ہے، تاہم یہ کو ئی پہلی کوشش نہیں ہے، اس سے قبل حکومت پاکستان نے حسن نواز اور حسین نواز کو حوالے کرنے کی درخواست کی تھی مگر برطانوی حکومت نے کوئی کارروائی نہیں کی۔ اسی طرح پاکستانی حکومت نے اسحاق ڈار کو حوالے کرنے کےلئے بھی درخواست دی تھی مگر اس میں کوئی بھی کارروائی نہیں ہوئی اور حکومت پاکستان کو ابھی تک اس سلسلے میں ناکامی کا سامنا ہے ۔

Sharing is caring!

Comments are closed.