کرونا ویکسین کا ایک انجکشن صرف کتنے روپے کا ملے گا؟ دل خوش کر دینے والی تفصیلت جاری

پونے(ویب ڈیسک) بھارتی شہر پونے میں ویکسین تیار کرنے والے سیرم انسٹی ٹیوٹ نے کم آمدنی والے ممالک کے لیے ممکنہ کرونا ویکسین کی قیمت 225 روپے مقرر کر دی ہے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق بھارتی ریاست مہاراشٹر کے شہر پونے میں قائم سیرم انسٹی ٹیوٹ نے آنے والی ممکنہ کرونا ویکسین کی قیمت زیادہ سے زیادہ دو سو پچیس روپے

متعین کی ہے، یہ قیمت بھارت اور دیگر کم اور درمیانے درجے کی آمدنی والے ممالک کے لیے مقرر کی گئی ہے۔ویکسین کے سلسلے میں بل اینڈ میلنڈا گیٹس فاؤنڈیشن کے تحت گلوبل الائنس فار ویکسین اینڈ امیونائزیشن (گاوی) 15 کروڑ ڈالر کا ایک رسک فنڈ بھی فراہم کرے گا، اس فنڈ کا استعمال برطانیہ کی کمپنی آسترازینیکا اور امریکی بایوٹیک کمپنی نوواویکس کی ممکنہ ویکسین کی تیاری میں مدد کے لیے کیا جائے گا۔خیال رہے کہ کو وِڈ 19 سے بچاؤ کی ویکسین کی جلد تیاری اور وسیع سطح پر تمام ممالک کی اس تک رسائی کے لیے گاوی، عالمی ادارہ صحت (WHO) اور کوایلیشن فار ایپی ڈیمک پریپیئرڈنیس انوویشن (سی ای پی آئی) کے درمیان پارٹنر شپ بھی عمل میں آئی ہے، اس پارٹنر شپ کے تحت 92 ممالک کے لیے ویکسین کی مذکورہ قیمت کا تعین کیا گیا ہے۔سیرم انسٹی ٹیوٹ نے بھی بھارت میں گاوی اور بل اینڈ میلنڈا گیٹس فاؤنڈیشن کے ساتھ مذکورہ ممالک کے لیے 10 کروڑ خوراکیں تیار کرنے اور تقسیم کرنے کے لیے شراکت داری کر لی ہے، اس معاہدے کے شراکت داری کر لی ہے، اس معاہدے کے تحت بھارت کو برطانوی کمپنی AstraZeneca سے ویکسین کی 1 ارب خوراکوں میں سے 50 فی صد اور نوواویکس سے 1 ارب خوراکوں کا ایک حصہ حاصل ہونے کی امید ہے۔سی ای او سیرم انسٹی ٹیوٹ کا کہنا تھا کہ 2021 کی پہلی شش ماہی میں 10 کروڑ خوراکوں کی تیاری اور تقسیم کے لیے یہ کمپنی ویکسین کی تیاری کے عمل میں تیزی لائے گی۔

Sharing is caring!

Comments are closed.