عمران حکومت کا ایک اور شاہکار ۔۔۔!!!قومی خزانہ ڈالروں سے لبالب بھرنے کو تیار ، اسٹیٹ بینک کی زرمبادلہ کے ذخائر بڑھانے کی نئی حکمت عملی نے پوری دنیا کو حیران ، پریشان کر دیا

کراچی (ویب ڈیسک)اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے زرمبادلہ کے ذخائر بڑھانے کے لیے نئی حکمت عملی اختیار کرلی ہے۔گورنر اسٹیٹ بینک رضا باقر نے کہاہے کہ بیرون ملک مقیم پاکستانی آئندہ ہفتے سے ڈیجیٹل اکائونٹ کھول سکیں گے،اس ڈیجیٹل اکائونٹ سے وہ پاکستان اسٹاک مارکیٹ اور حکومتی تمسکات میں سرمایہ کاری کرسکیں گے۔ایک خصوصی انٹرویومیں

گورنر اسٹیٹ بینک ڈاکٹرباقر رضانے کہا کہ ڈیجیٹل اکائونٹ سے بنیادی بینکنگ کی سہولیات حاصل کی جاسکیں گی، 8 مقامی بینک ڈیجیٹل اکائونٹ کی سہولت فراہم کریں گے۔رضا باقر نے کہا کہ روشن ڈیجیٹل اکائونٹ اسی سہولت کا نام ہوگا، یہ اکائونٹ ڈالر اور پاکستانی روپے میں کھولے جاسکیں گے۔انہوں نے بتایاکہ تارکین وطن کے لیے قرض سرٹیفکیٹ سہولت چند ہفتوں میں شروع کررہے ہیں، یہ ڈیٹ سرٹیفکیٹس 5 دورانیے کے لیے ہوں گے۔گورنر اسٹیٹ نے کہا کہ ڈالر سرٹیفکیٹ پر شرح منافع 5 سے 7 فیصد اور روپے سرٹیفکیٹ پر منافع 9 سے 11 فیصد ہوگا۔رضا باقر نے واضح کیا کہ شرح سود کا فیصلہ مانیٹری پالیسی کمیٹی کا اختیار ہے۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق ایف آئی اے نےجہانگیر ترین کی کمپنی جے ڈبلیو ڈی کیخلاف منی لانڈرنگ کی تحقیقات کاآغازکردیاہےاور ملک بھر سےجےڈبلیو ڈی کی تفصیلات مانگ لیں ہیں۔نجی ٹی وی کے مطابق وفاقی تحقیقاتی ادارے ایف آئی اے نے جہانگیر ترین کی کمپنی جے ڈبلیو ڈی کیخلاف منی لانڈرنگ کی تحقیقات کاآغاز کرتے ہوئے ملک بھر سے جے ڈبلیو ڈی کی تفصیلات مانگ لیں۔ اس حوالے سے ایف آئی اے کی سی آئی ٹی کی جانب سے ڈپٹی کمشنرز کو خط لکھا، خط ملتان،لاہور، کراچی، اسلام آباد اور رحیم یار خان کے ڈپٹی کمشنرز کو لکھا گیا ہے، ڈپٹی کمشنر کا کہناہےکہ جہانگیر ترین کےخاندان سمیت 22 افراد اور کمپنیوں کاڈیٹا مانگا گیا ہے۔ایف آئی اے نےایل ڈی اےاور سی ڈی اے سربراہان سے بھی تفصیلات طلب کرلیں ہیں جبکہ جے آئی ٹی نے جہانگیر ترین کے بیٹے علی ترین کا بھی ریکارڈ مانگ لیاہے۔ خط کے ذریعے منقولہ،غیر منقولہ جائیداد،بینک اکاؤنٹس کی تفصیلات جبکہ ایس ای سی پی سے جہانگیر ترین کے نام پر دیگر کمپنیوں کی تفصیلات بھی طلب کی ہیں۔ دوسری جانب ایف آئی اے نے سابق گورنر پنجاب سید احمد محمود کے خلاف بھی تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *