متحدہ جنرل اسمبلی کے نو منتخب صدر کی کل پاکستان آمد

اسلام آباد (ویب ڈیسک)اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی (یو این جی اے) کے نو منتخب صدر وولکن بوزکر دو روزہ دورے پر کل (9اگست) کو پاکستان پہنچیں گے۔واضح رہے کہ وولکن بوزکر کا دورہ پاکستان 27 جولائی کو طے تھا لیکن لاجسٹکس مسائل کے باعث ان کا دورہ منسوخ ہوگیا تھا۔دفتر خارجہ کی جانب سے اعلامیے میں

تصدیق کی گئی کہ یو این جی اے کے صدر کل پاکستان کے دورے پر اسلام آباد پہنچیں گے۔ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق حکومت کی دعوت پر وولکن بوزکر 9 اور 10 اگست کے دورے پر پہنچیں گے۔علاوہ ازیں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی وولکن بوزکر سے ملاقات میں اقوام متحدہ کے تین اہم ستون امن و سلامتی، ترقی اور انسانی حقوق سے متعلق امور پر وسیع پیمانے پر بات چیت کریں گے۔یو این جی اے اپنے دورے میں وزیراعظم عمران خان سے بھی ملاقات کریں گے۔دفتر خارجہ کے مطابق وولکن بوزکر کا دورہِ پاکستان ‘بین الاقوامی امن و سلامتی کے فروغ اور بحالی میں اقوام متحدہ کی کوششوں میں پاکستان کی مضبوط اور قابل قدر شرکت کو اجاگر کرنے کا ایک اہم موقع ہے’۔اس ضمن میں کہا گیا کہ پاکستان عالمی امن و سلامتی، معاشی اور معاشرتی ترقی، انسانی حقوق کے فروغ اور تحفظ، عالمی تنازعات کے پرامن تصفیے سے متعلق امور میں یو این جی اے کے کردار کی حمایت کرتا رہے گا۔دوسری جانب وولکن بوزکر بوزکیر نے کہا کہ بطور صدر منتخب ہونے کہ وہ معمول کے مطابق متعدد ممالک کا دورہ کررہے ہیں۔انہوں نے ٹوئٹ میں کہا کہ ‘طے شدہ دورہ منسوخ ہونے کے بعد اب کل اپنے اسلام آباد پہنچوں گا’۔انہوں نے مزید کہا کہ وہ اقوام متحدہ کے 75 ویں اجلاس کے ایجنڈے کے امور اور ترجیحات پر پاکستانی قیادت سے تبادلہ خیال کریں گے۔خیال رہے کہ ترک سفارتکار گزشتہ ماہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 75ویں سیشن میں صدر منتخب ہوئے تھے اور انہوں نے پیر کو پاکستان پہنچنا تھاانہوں نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا تھا کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی دعوت پر مجھے 26 اور 27 جولائی کو پاکستان کا دورہ کرنا تھا جو فلائٹس کے تکنیکی مسائل کی وجہ سے ملتوی کردیا گیاانہوں نے مستقبل میں دورہ پاکستان کی امید ظاہر کرتے ہوئے کہا تھا کہ ان کی نظریں پاکستانی حکام سے اقوام متحدہ کی 75ویں جنرل اسمبلی کے ایجنڈا کے مسائل اور ترجیحات کے حوالے سے مثبت گفتگو پر مرکوز ہیں۔اس کے جواب میں شاہ محمود قریشی نے کہا کہ میری نگاہیں ایک مثبت اور تعمیراتی دورے کے لیے آپ کو خوش آمدید کہنے پر مرکوز ہیں۔نو منتخب صدر نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی دعوت پر دورہ کرنا تھا اور شاہ محمود قریشی بھی جنرل اسمبلی صدر کے دورے کا اعلان کر چکے تھے۔سفارتی ذرائع کا کہنا تھا کہ نو منتخب صدر اب اقوام متحدہ میں اپنی ذمہ داریاں سنبھالنے کے بعد پاکستان آئیں گے۔وزیر خارجہ نے کہا تھا کہ وہ وولکن بوزکیر کو مقبوضہ کشمیر کے حوالے سے پاکستان کے مؤقف سے آگاہ کریں گے جہاں اس وقت مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی صورت حال سب سے زیادہ بد ترین ہے۔وزیر خارجہ نے کہا تھا کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی جانب سے جاری ظلم و ستم سے بھی بوزکیر کو آگاہ کریں گے۔

Sharing is caring!

Comments are closed.