مشکل وقت میں قوم کے لیے خوشخبری۔۔۔پاکستان سے تیل اور گیس کے وسیع ذخائر دریافت کر لیے گئے

پشاور(نیوز ڈیسک)ٹل بلاک خیبرپختونخواسے تیل وگیس کا ذخیرہ دریافت ہواہے،ذخیرے سے یومیہ ایک کروڑ 82 لاکھ مکعب فٹ گیس نکلے گی اس کے علاوہ یومیہ ایک ہزار 844 بیرل تیل بھی نکلے گا ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق ٹل بلاک خیبرپختونخواسے تیل وگیس کا ذخیرہ دریافت ہوا ہے،ذخیرے سے یومیہ ایک کروڑ 82 لاکھ مکعب فٹ گیس نکلے گی اس کے علاوہ یومیہ ایک ہزار 844 بیرل تیل بھی نکلے گا،ذخیرے سے کمرشل پروڈکشن دسمبر 2019 میں شروع ہوگی ،تیل و گیس کاذخیرہ پاکستان آئل فیلڈ نے دریافت کیا۔

خیال رہے کہ پاکستان سے تیل اور گیس کے ذخائر کی دریافت کا معاملہ اس وقت شروع ہوا جس وقت عمران خان کو اقتدار سنبھالے کچھ ہی عرصہ گزرا تھا، وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے اس موقع پر پیغام بھی چھوڑا گیا کہ قوم دعا کرے چند ہفتوں میں قوم کو بڑی خوشخبری سنائی جائے گی، امریکی کمپنی نے زیر سمندر میں کیکڑا ون میں کھدائی کا کام شروع کیا جسکے خاطر خواہ نتائج حاصل نہ کیے جا سکے، تاہم بعد میں کمپنی کی جانب سے یہ کہتے ہوئے کھدائی کا عمل روک دیا گیا کہ ابھی تیل اور گیس کی تلاش کے لیے مزید ڈرلنگ کی ضرورت ہے جس کے لیے مزید ذرائع درکار ہونگے ۔ اس کے علاوہ وزیر برائے بحری اُمور علی زیدی کی جانب سے بھی یہ دعویٰ کیا گیا کہ کراچی میں زیرِ سمندر تیل و گیس کی دریافت کے لیے کھدائی کا کام جاری ہے۔ ان کے بقول، ماہرین ہدف سے محض 200 میٹر دور ہیں اور قوم کو جلد بڑی خوش خبری ملے گی۔تاہم، اسلام آباد میں ’وائس آف امریکہ‘ کودیے گئے ایک انٹرویو میں علی زیدی نے خود اعتراف کیا کہ تاحال یہ واضح نہیں کہ زیرِ سمندر یہ تیل کے ذخائر ہیں یا گیس کے۔ لیکن، ان کے بقول “کچھ نہ کچھ تو ضرور ہے۔”علی زیدی نے اُمید ظاہر کی کہ اگر یہ ذخائر دریافت ہو گئے تو پاکستان کے معاشی حالات بہتر ہو جائیں گے۔علی زیدی کا کہنا تھا کہ اگر ان ذخائر کی دریافت کے بعد بہتر انتظامی حکمتِ عملی اختیار کی گئی تو پاکستان ناروے بن سکتا ہے۔ بصورتِ دیگر پاکستان کی مثال نائیجیریا جیسی ہوگی جہاں، ان کے بقول، امیر طبقے نے قدرتی وسائل کو اپنی دولت میں اضافے کے لیے استعمال کیا۔زیرِ سمندر قدرتی وسائل کی دریافت کے بارے میں وزیرِ اعظم عمران خان کے بیان سے متعلق ایک سوال پر علی زیدی کا کہنا تھا کہ وزیرِ اعظم کا بیان قبل از وقت نہیں تھا۔علی زیدی کے بقول، وزیرِ اعظم عمران خان نے قوم سے دعا کی اپیل کی تھی کیوں کہ جب کمپنیوں نے کھدائی کا کام شروع کر دیا تھا تو اس کے بعد کوئی بات چھپانے والی نہیں تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں